Mujhey Tum Yaad Aati Ho - Urdu Ghazal

Mujhey Tum Yaad Aati Ho – Urdu Ghazal

Muqaddar k sitaaron per

Zamany k ishaaron per

Udaasi k kinaron per

Kabhi veeran sehra mein

Kabhi Sunsaan rahoon mein

Kabhi khairaan aankhon mein

Kabhi be-jaan lamhon mein

Tumhari yaad holy sy

Koi sargoshi karti hai

Ye palkein bheegh jati hain

Do aansoo toot girty hain

Main palkoon ko jhukata hon

bezahir Muskarata hon

Faqat itna hi kehta hon

Mujhey kitna satati ho

Mujhey tum yaad aati ho

Mujhey tum yaad aati ho

غزل

مدر کے ستاروں پر

زمانے کے ستاروں پر

اُداسی کے کناروں پر

کبھی ویران صحرا میں

کبھی سنسان راہوں میں

کبھی حیران آنکھوں میں

کبھی بےجان لمحوں میں

تمہاری یاد ہولے ے

کوئی سرگوشی کرتی ہے

یہ پلکیں بھیگ جاتی ہیں

دو آنسو ٹوٹ گرتے ہیں

میں پلکوں کو جکاتا ہوں

بظاہر مسکراتاہوں

فقط اتنا ہی کہتا ہوں

مجھے کتنا ستاتی ہو

مجھے تم یاد آتی ہو

مجھے تم یاد آتی ہو